آومحفوظ پاکستان بنائیں

آومحفوظ پاکستان بنائیں

مئی 28, 2018 0 By فخرنوید

"آومحفوظ پاکستان بنائیں”
محترم قارئین اکرام!پاکستان کو صرف ایک ہی صورت میں محفوظ بنایا جا سکتاہے ۔وہ صورت ہے آنے والی نسلوں کی بہتر تعلیم وتربیت سے۔ ہم نے جو بچے پیدا کیے ہیں ہماری ذمہ داری صرف ان کو تعلیم دلوانا نہیں ہے بلکہ وطن عزیز میں رہنے والا لہر بچہ ہمارا ہی بچہ ہے جب یہ سوچیں گے تو مثبت تبدیلی آئے گی اور ہمارا وطن ترقی کرئے گا اور اس کا مستقبل محفوظ ہو سکے گا روز مرہ زندگی میں ہمرے ارد گرد مختلف بھٹوں ،فیکٹریوں ،دکانوں ،ہوٹلوں اور دیگر مقامات پر جو 14 سال سے کم عمر کے بچے غربت یا کسی مجبوری کی وجہ سے تعلیم سے محروم ہیں تو ان کے اندر مثبت سوچ اور تبدیلی کے لیے تعلیم ضروری ہے چاہے انہیں دن میں دو گھنٹے کے لیے پڑھایا جائے تعلیم سے ان کے اندر شعور پیدا ہو گا اور یہ کم عمری میں معاشرے میں پیدا ہونے والی منفی سرگرمیوں اور رحجانات سے بچ پائیں گے ۔یہ بچے کم عمری میں مخنت مشقت کرنے کی وجہ سے ذہنی و جسمانی استحصال کا شکار ہو جاتے ہیں جس سے ان کے اندر منفی سوچ کا رحجان بڑھ جاتا ہے اور یہ مثبت شہری نہیں بن پاتے تمام تاجر تنظیموں بھٹہ مالکان اور ان بچوں کے منسلک تمام تر افراد اور تنظیموں سے گزارش ہے کہ اس بات کو یقینی بنائیں کے ہم نے ان بچوں کو استحصال سے محفوظ بنانا ہے اور انہیں تعلیم کے زیور سے مالا مال کرنا ہے جس سے انہی بچوں میں فرض شناسی ،ایمانداری محبت پیدا ہوگی اور ان کے اندر نفرت محرمیوں کے رحجانات کا خاتمہ وہ پائے گا ۔خدا کے لیے اپنی سوچ کو مثبت بنائیں اور پرانی سوچ سے بارہ آئیں اور انسانی ہمدردی کی بنیادوں پر ان بچوں کو اپنا بچ سمجھ کر ان کی تعلیم و تربیت کو یقینی بنائیں تا کہ پاکستان کا آنے والا کل رروشن ہو سکے۔ ایک عالمی ادارے کی رپورٹ کے مطابق آنے والے 30سالوں بعد پاکستان بوڑھا ہو جائے گا جس کا مطلب ہے کہ پاستان کی آبادی کا کثیر حصہ آج نوجوانوں پر مشتعمل ہے جو آنے والے 30 سالوں میں بڑھاپے کی طرف جائے گا اس لیے ضروری ہے کہ ہم اپنی منصوبہ سازی کر یں کے آنے والے دور کے تمام تر چیلنجوں کا با آسانی اور ہمت و جرت سے مقابلہ کر سکیں۔ یاد رکھیں بنگہ دیش نہ تو ایٹمی طاقت ہے اور نہ ہی اس کے پاس دنیا کی نمبر ون فوج ہے پھر بھی وہ ترقی میں ہم سے آگے نکل چکا ہے اور آج تک انڈیا کی یہ جرت نہیں ہوئی کہ اس پر قبضہ کر سکے ۔بھولی بھالی عوام سے درخواست ہے کہ خدا را ہر بچے کی تعلیم کو یقینی بنانے کی کوشش کریں تا کہ ہمارا ملک پاکتان بھی ترقی میں آگے جا سکے ۔صرف تعلیم ہی روشن پاکستان کی ضمانت ہے آئین ہم سب عہد کریں کے ہم اپنے ذات سے تبدیلی کا آغاز کرتے ہیں اپنے ارد گرد موجود کسی بھی بچے کو تعلیم کے زیور سے محروم نہیں رہنے دں گے جتنا بھی ممکن ہو سکتا ہے آنے ولای نسلوں کی بہتر مستقبل کے لیے اس تعلیم ضرور دلوائیں گے۔
شمیم احمد متجسس کیلانی
سوشل ورکر
سینکڑوں غریب بچوں کی امید